Faiz Pur mein Maulana Aazad ko Yaad Kiya Gaya

Articles

فیض پور میں مولانا آزاد کو یاد کیا گیا

وسیم عقیل شاہ

فیض پور 11 نومبر : خدمت ملت گروپ کے زیر اہتمام ہر سال کی طرح اس سال بھی ہندوستان کے اولین وزیر تعلیم، محب اردو اور بھارت رتن *مولانا ابوالکلام آزاد* کے یوم پیدائش کے پیش نظر ایک تعزیتی جلسے کا انعقاد نہایت ہی تزک و احتشام کے ساتھ عمل میں آیا ـ واضح رہے اس تقریب کی صدارت علاقہ خاندیش کے مشہور سیاست دان، سماجی خدمت گار اور ریاست مہاراشٹر کے سابق ایم ایل اے شریش چودھری نے انجام دی ـ اس موقع پر شریف ملک نے مولانا آزاد کی سماجی نظریات کو واضح کیا تو رویندر نارکھیڑے نے مولانا آزاد کے سیکولر کردار پر روشنی ڈالی ـ اسی طرح وسیم عقیل شاہ نے مولانا کے تعلیمی تصورات پر اپنے خیالات کا اظہار کیا ـ خطبہ صدارت پیش کرتے ہوئے سابق ایم ایل اے سریش چودھری نے اس طرح کے پروگرام کا انعقاد کرنے پر خدمت ملت گروپ کے اراکین کو مبارکباد دی اور مولانا آزاد کی شخصیت کے متعدد پہلوؤں پر روشنی ڈالی ـ انھوں نے مولانا کے سیاسی کردار کو سامعین کے روبرو اجاگر کیا نیز مولانا کے تعلیمی خوابوں کو شرمندہ تعبیر کرنے کے لیے اپنے ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی ـ اس جلسے میں نے بطور مہمانان خصوصی کلیم خان (صدر بدلیہ ) ،کیتن کرنگے، رویندر ہولے شرکت فرما تھے ـ ساتھ ہی شہر فیض پور کے کوثر علی (شہر صدر کانگریس ) آصف شیخ ، ریاض ممبر، وحید سر، شہباز خان گرو سر، شیخ عرفان اور رئیس مومن جیسے علمی، سماجی و سیاسی شخصیات نے بھی شرکت کر کے اپنی سماجی و تعلیمی ذمہ داری کا ثبوت فراہم کیا ـ پروگرام کو کامیابی سے ہمکنار کرنے میں خدمت ملت گروپ کے صدر مدثر نظر، نائب صدر سید فاروق، رکن عمران خان، شیخ شفیق، اختر شیخ اور ناظم شیخ کا خاص تعاون حاصل رہا ـ نظامت کے فرائض مدثر نظر نے بہ حسن و خوبی انجام دیے جبکہ رسم شکریہ عمران خان نے پیش کی ـ