Aik Shaam Yume Azadi ke Naam

Articles

ممبئی یونیورسٹی میں یوم آزادی ِ ہند کی مناسبت سے شعری نشست

ممبئی، 14 اگست: شعبہ اردو ،ممبئی یونیورسٹی اور سرسید اکیڈمی ممبئی کے باہمی اشتراک سے ایک شعری نشست کا انعقاد یوم آزادی ہند کی مناسبت سے کیا گیا۔ اس شعری نشست کی صدارت شعبہ اردو کے صدر پروفیسر صاحب علی نے کی اور ممبئی بی جے پی کے نائب صدر شری حید ر اعظم نے مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت کی۔ پروگرام کے آغا ز میں پروفیسر صاحب علی نے کہا کہ شعبہ اردو ممبئی یونیورسٹی نے ہرسال یوم آزادی اور یوم جمہوریہ سے ایک دن قبل اس طرح کی شعری نشست کے انعقادکا فیصلہ کیا ہے اور اس سلسلے کاآغاز آج کی اس نشست سے ہورہا ہے۔انھوں نے علمی ، ادبی اور ثقافتی پروگراموں کے انعقاد میں شعبہ اردوکی فعالیت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ شعبہ کی جانب سے مختلف علمی و ادبی موضوعات پرقومی اور بین الاقوامی سطح کے سیمینار، کانفرنس ،ورکشاپ اور مذاکرات کے انعقاد کے علاوہ ایسے ثقافتی پروگراموں کا انعقاد بھی وقتاً فوقتاً کیا جاتا رہا ہے جو ہماری تہذیبی و ثقافتی روایتوں کی تجدید میں معاون ثابت ہوتے ہیں۔پروفیسر صاحب علی نے اس شعری نشست میں شرکت کرنے والے تمام شعرا اور خصوصاً حیدر اعظم کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ موصوف اقلیتی طبقہ کے مسائل و مفاد کے لیے ہمہ وقت جس طرح سرگرم ہیں وہ لائق ستائش ہے اور اس پروگرام میں ان کی شرکت بھی اقلیتی طبقہ سے ان کے والہانہ لگاو کا ایک ثبوت ہے۔
اس شعری نشست کے مہمان خصوصی حیدر اعظم نے شعبہ  اردو اور پروفیسر صاحب علی کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ یہ میری خوش نصیبی ہے کہ ایسے باوقار پروگرام میں شرکت کا موقع ملا جہاں شہر کے معروف و معتبر شعرا کے کلام سے محظوظ ہونے کے ساتھ ہی شعبہ  اردو کی مختلف النوع علمی و ادبی سرگرمیوں سے بھی واقفیت حاصل ہوئی ۔انھوں نے کہا کہ اس وقت اردو زبان کے محدود ہوتے دائرے کو وسعت عطا کرنے میں اس طرح کی کاوشیں اہم کردار ادا کر سکتی ہیں اور شعرا اپنے کلام کے ذریعہ نہ صرف زبان کی مقبولیت میں اضافہ کر سکتے ہیں بلکہ اپنے سامعین کو عصری فہم و شعور بھی فراہم کر سکتے ہیں۔ حید ر اعظم نے کہا کہ شاعروں کو نہ صرف ماضی اور حال کی بات کرنی چاہیے بلکہ انھیں مستقبل کے ان امکانات کا بھی سراغ لگانے کی کوشش کرنی چاہیے جو معاشرہ میں خوشحالی اور ترقی کا باعث بن سکے۔
اس شعری نشست کو ڈاکٹر فیضان شہپر نے اپنی دلچسپ اور متاثر کن نظامت کے ذریعہ پروقار بنایا اور جن شعرا نے اپنے کلام سے سامعین کو محظوظ کیا ان کے اسما ہیں ، عبدالاحد ساز، عرفان جعفری، قاسم امام، حامد اقبال صدیقی،عبید اعظم اعظمی، بھاگیہ شری ورما،فیضان شہپر، قمر صدیقی، سعید اختر، ذاکر خان اور رشید اشرف خان۔ ان کے علاوہ لندن میں اردو کی تدریس سے وابستہ عقیل دانش نے بھی اشعار سنائے۔ان شعرا نے غزلوں، نظموں، قطعات اور متفرق اشعار کے ذریعہ مجاہدین آزادی کو خراج عقیدت پیش کیا اور عصری حالات کے تناظر میں مختلف انشانی جذبات کا اظہار دلکش پیرایہ میں کیا۔
اس پروگرام میں محمد الیاس خان (پروپرائٹرسرفیس انفرا اسٹرکچر پرائیویٹ لمیٹیڈ )اورادبی و شعری ذوق رکھنے والی شہر کی مقتدر شخصیات اور شعبہ  اردو کے اساتذہ ڈاکٹر جمال رضوی، ڈاکٹر مزمل سرکھوت اور روشنی خان کے علاوہ ایم اے ، ایم فل اور پی ایچ ڈی کے طلبا نے کثیر تعداد میں شرکت کی اور پروگرام کو کامیاب بنایا۔

تصویر میں مائک پر پروفیسر صاحب علی بائیں سے دائیں: حیدر اعظم ، محمد الیاس خان اور فیضان شہپر

 

تعلیمی ، تہذیبی اور ادبی پروگراموں کی رپورٹ اردو چینل ڈاٹ نیٹ پر شائع کرنے کے لیے ہمیں ارسال کریں۔

admin@urduchannel.in  or urduchannel@gmail.com